شانِ مقدسہ مریم

وعظ: فادر ایرک رسانی او۔ایف۔ایم تحریر : یعقوب سعید

شروع کرتا ہوں القادر کے نام سے جو مقدسہ مریم کے وسیلہ ہم جیسا انسان بنا۔عزیزو آج ہم سب خُداباپ کے شکر گزار ہیں کہ ہم آسمانی عبادت کو اس زمین پر اداکر رہے ہیں ۔پاک کلام میں لکھاہے کہ آسمان تیرا تخت اور زمین تیرے پائوں کی چوکی ہے۔ آج ہم سب مقدسہ مریم کے ساتھ ملکر خُداکی عبادت میں شامل ہوئے ہیں ۔ میں آپ سب کو مبارک باد پیش کرتا ہوں کہ آپ سب مومنین اپنے ایمان میں مضبوط رہتے ہوئے مسیحی ایمان کا پرچار کرنے آئے ہیں۔ میری دُعا ہے کہ خُداوند آپ سب کو اور آپ کے خاندانوں کو برکات سے مالا مال کرئے۔ ہم دیکھتے ہیں کہ ایک مسیحی کی زندگی میں تین چیزیں بہت اہمیت کی حامل ہیں : 1۔ دُعا 2۔ کلام 3۔ ایمان یعنی ایک مسیحی دُعا ، ایمان ، اور کلام کے بغیرکچھ بھی نہیں ہے۔مسیح خُداوند میں میرے عزیزومقدسہ مریم ہی وہ ہستی ہے جس کی زندگی اِن تینوں خوبیوں سے بھری ہوئی ہے۔مقدسہ مریم کی زندگی پاکیزہ، دُعائیہ، پُرفضل تھی اِس لئے خُدانے مقدسہ مریم کوخُداوند یسوع مسیح کی ماں بنے کا درجہ عطا کیا۔کچھ لوگ سلام اے مریم کی دُعا پڑھنے سے منع کرتے ہیں لیکن پاک کلام میںلکھا ہے خُدا خود اِس دُعا کو جبرائیل فرشتہ کے ذریعے ہم تک پہنچا تااور ہمیں سیکھاتا ہے کہ ہم مقدسہ مریم کو سلام پیش کرتے رہیں۔ (مقدس لوقا 26:1 – 30 ) تو پھر میں اور آپ کون ہوتے ہیں خُدا کی بات کو نہ ماننے والے۔ عزیزو فرشتہ اس بات کی تصدیق کرتا ہے کہ خُداوند تیرے ساتھ ہے اور تُو عورتوں میں مبارک ہے ۔ آج میں اور آپ مقدسہ مریم کے ساتھ ہو یا نہ ہو مگر خُدا مقدسہ مریم کے ساتھ ہے۔ہم اُسے مبارک کہیں یا نہ کہیں لیکن خُدانے اُسے تمام عورتوں میں مبارک ٹھہرایا۔اِسی لئے مقدسہ مریم خود فرماتی ہے کہ ’’دیکھ اب سے لے کر ہر زمانے کے لوگ مجھے مبارک کہیں گے‘‘۔ (مقدس لوقا 48:1)
عزیزو مقدسہ مریم فرشتہ کا سلام سن کر وہی سلام ایصابات کو سنانے جاتی ہے جیسا ہی ایصابات سلام سنتی ہے اُس کے بطن میں بچہ اچھل پڑتا ہے اور وہ رُوح القدس سے بھر جاتی ہے۔ یہاں غورطلب بات یہ ہے کہ مقدسہ مریم کے ذریعے یوحنا ا صطباغی ماں کے بطن میں رُوح کا بپتسمہ حاصل کرتا ہے۔ اور یوحنا اصطباغی پہلا مسیحی ٹھہرا۔ اس لئے یسوع مسیح فرماتے ہیںمیں تم سے سچ کہتا ہوں کہ جو عورتوں سے پیدا ہوئے ہیں اُن میں یوحنا اصطباغی سے بڑا کوئی ظاہر نہیں ہوا۔ (مقدس متی 11:11)۔
جب مقدسہ مریم ایصابات کے پاس جاتی ہے تو ایصابات رُوح کی ہدایت سے اِس سچائی کو جان جاتی ہے اور اقرار کرتی ہے کہ میرے لئے یہ بات کیسے ہوئی کہ میرے خُداوند کی ماں میرے پاس آئی۔ ورنہ ایصابات کو کیسے پتہ چل جاتا ہے کہ مقدسہ مریم خُدا کی ماں ہے۔ مقدسہ مریم کو یہ شرف حاصل ہوا کہ وہ کلمہِ خُدا کہلائی ۔ عزیزو پرانا عہد نامہ میں خُدانے حضرت موسیٰ کو کلام یعنی دس احکام دینے کے لئے اوپر پہاڑ پر بلایا اور خُداوند موسیٰ سے فرماتا ہے کہ اپنے پائوں سے جُوتی اُتار کیونکہ یہ جگہ مقدس زمین ہے! ( خروج 5:3) یعنی خُدا اُس کی ناپاکی کو دور کرنے کو کہتا ہے۔ تب موسیٰ نے خُداوند کا سارا کلام لکھا۔
(خروج 4:24)۔جبکہ نیا عہد نامہ میں خُدااپنا کلمہ مقدسہ مریم کے مبارک بطن میں متجسد کرنے کو ہے تو خُدا نے مقدسہ مریم کو نہ تو اوپر بلایا اور نہ ہی جُوتی اتارنے یعنی ناپاکی کو دُور کرنے کا بوُلا۔کیونکہ خُدابخوبی جانتا ہے کہ یہ ہستی تو پہلے ہی پاکیزہ، باکراہ، بیداغ کنواری، اور پُر فضل ہے اس لئے فرشتہ آسمان سے آتے ہی اُس کو پُر فضل کہہ کر مخاطب کرتا ہے اور اُس کو عورتوں میں مبارک ٹھہراتا ہے کہ خُدا نے تجھے پسند کیا ہے اور تجھے اِس لائق پایا کہ خُداوند یسوع مسیح کی ماں بنے۔
عزیز مومنین مقدسہ مریم کا ایمان خُدا وند یسوع مسیح پر پختہ اور مضبوط تر تھا۔جب قانائے جلیل میں شادی کے موقع پر مَے ختم ہو جاتی ہے تو مقدسہ مریم کو اُس خاندان کی بے عزتی ہونے کی فکر محسوس ہوتی ہے اس لئے وہ فورا ً اس مسئلہ کے حل کے لئے اپنے بیٹے پر پختہ ایمان اور بھروسہ رکھتے ہوئے یسوع مسیح کی مدد طلب کرتی ہے تو یسوع مسیح فرماتے ہیں کہ مجھے اور تجھے کیا میرا ابھی وقت ہنوز نہیں آیا۔
(مقدس یوحنا4:2)لیکن مقدسہ مریم یہ جوا ب سُن کر مایوس نہیں ہوئی اور نہ ایمان میں کمزور ہوئی بلکہ وہ یقین اور بھروسہ اور ایمان کے ساتھ خادموں کو کہتی ہے کہ جو کچھ یہ تم سے کہتا ہے وہ کرو۔ یہ ہے ایمان جو مقدسہ مریم کا اپنے بیٹے ہمارے خُداوند یسوع مسیح پرتھا۔ اور یسوع مسیح اپنی ماں کی بات کو رد نہ کرتے ہوئے پہلا معجزہ کرتے ہیں۔ مقدسہ مریم کا فرشتہ کو جواب دینا بھی ایمان ہی کی بدولت تھاکہ میں خُداوند کی بندی ہوں میرے لئے تیرے قول کے موافق ہو۔ (مقدس لوقا 38:1)یعنی کامل ایمان خُداکی الہٰی ذات پر رکھنا اور اُس کی مرضی اور رضا کے مطابق اپنی زندگی بسر کرنا۔ مقدسہ مریم نے خُداکی محبت کو قریب سے جانا اِس لئے وہ کہتی ہے کہ القادر نے میرے لئے بڑے بڑے کام کئے ہیں اور اُس کا نام قُدوس ہے۔
آخر میں مَیں مکاشفہ 1:12آیت پر روشنی ڈالنا چاہتا ہوں کہ ایک خاتون سورج کو اوڑھے اور پائوں کے نیچے چاند اور سر پر بارہ ستاروں کا تاج تھا ۔عزیزو یہ خاتون مقدسہ مریم کے علاوہ اور کوئی ہو نہیں سکتی جس کو خُدانے اپنے بیٹے کی ماں ہونے کا درجہ عطا کیا اور تمام عورتوں میں مبارک ٹھہرایا۔ مقدسہ مریم کو یہ برکت ملی کہ وہ پُر فضل اور پاکیزہ ہوتے ہوئے آسمان کی ملکہ ہونے کا شرف حاصل کرتی ہے۔
کیونکہ یسوع مسیح سلامتی کا شہزادہ ہے اور شہزادے کی ماں ملکہ ہوتی ہے۔ اکثر لوگ کہتے ہیں کہ یہ بُت پرستی ہے آپ ہاتھ جوڑ کر اُن سے کہیں کہ خُداکیلئے ہمارے ایمان کے ساتھ مت کھیلیں۔ ہم مجسمہ دیکھ کر یہ تو کہہ دیتے ہیں کہ بُت پرستی ہے لیکن اُس مجسمہ کے پیچھے کا ایمان نہیں دیکھتے کہ جس کا ہستی کا مجسمہ بنایا گیا ہے وہ ہستی خُداکے کتناقریب تھی اور خُدا کی مرضی کے مطابق زندگی بسر کرتی رہی اُن کا ایمان واحد زندہ
خُدا پر ہی تھا۔اگر ہم مقدسہ مریم کے پیچھے چلتے ہیں تو وہ ہمیں خُداوند یسوع المسیح کے قریب کے کر جائے گی کیونکہ اُس کا ایمان اور بھروسہ اپنے بیٹے پر پختہ ہے ۔
میں آپ سب کو مبارک باد پیش کرتا ہوں جو اس زیارتِ مقدسہ مریم کی عبادات میں شامل ہوئے ہیں میری دُعا ہے کہ مقدسہ مریم ہمیشہ آپ کی سفارشات کو خُدا تک پہنچاتی رہے تاکہ خُدا باپ آپ کے خاندانوں کو بہت سی برکات سے مالا مال کرتا رہے اور آپ کو مسیحی ایمان میں مضبوط رہنے کا فضل عطا کرئے تاکہ آپ سب مومنین اپنی زندگیوں سے خُدا کے نام کو عزت اور جلال دیتے رہیں۔ مقدسہ مریم کی زیارت آپ کیلئے خوشیوں ، برکتوں اور فضائل کا وسیلہ بنے۔مسیح ہمارے خُداوند کے وسیلہ سے ۔ (آمین )

Samson

Read Previous

ویٹی کن مجلس دوئم اور انجیل کی بشارتِ نو

Read Next

نظم (خود ہی بتانے والا ہے)

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے