سینٹ ٹریضہ چرچ میرپورخاص میں ایک روزہ تربیتی ورکشاپ کا انعقاد

سینٹ ٹریضہ چرچ میرپورخاص میں ایک روزہ تربیتی ورکشاپ کا انعقاد

میرپورخاص (ریاض ڈیوڈ) بروزمنگل 5 اکتوبر 2021 کو مکتبہ عناویم پاکستان کے زیرِ اہتمام ایک روزہ تربیتی ورکشاپ کا انعقاد سینٹ ٹریضہ چرچ میرپورخاص میں کیا گیا ۔ جس کا مرکزی موضوع “مقامی تھیالوجی” تھا۔سیمینار میں ” کلیسیا” کے موضوع پر ماسٹر خرم شہزاد نے اظہارِ خیال پیش کیا۔
پروگرام کا آغاز دعااورتلاوت سے ہوا جس میں کومل بابراور ثمینہ عمانیوئیل نے رہنمائی کی۔ جناب ریاض ڈیوڈ(کوآرڈینیٹر میر پورخاص گروپ) نے تمام مہمانوں اور شرکاء کو خوش آمدید کہا اور سندھ کی روایت کے مطابق ریورنڈ فادر عمانیوئیل عاصی ، ( چئیرپرسن۔ مکتبہ عناویم پاکستان ) ، مسز الیشبع جاوید ( ڈائریکٹر ۔مکتبہ عناویم پاکستان ) ، ریورنڈ فادر طارق طالب ( ریکٹر سینٹ بوناونچر مائینر سیمنری میرپورخاص) ریورنڈ فادر لعذر اسلم او ایف ایم کیپ اور جناب یوسف گل ( چیف کوآرڈینیٹر سندھ ، بلوچستان ) کو اجرک کے تحائف پیش کئے ۔
پروگرام کے اغراض و مقاصد بیان کرتے ہوئے ریاض ڈیوڈ نے بتایا کہ مکتبہ عناویم پاکستان کی رویا ہے کہ مومنین میں مقامی تھیالوجی کو فروغ دیا جائے اسی حوالے سے اس تربیتی ورکشاپ کو ریورنڈ فادر البرٹ نولن کی کتاب مقامی تھیالوجی سے مرتب کیا گیا ہے۔
ماسٹر خرم شہزاد نے موضوع کلیسیا پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہا بتایا کہ کلیسیا کا تعلق مومنین سےہے ۔ کیونکہ جب بھی کلیسیا کا موضوع زیرِ بحث آتا ہے تو بہت سے سوالات ذہنوں میں آتے ہیں یہ سوال کلیسیا کے ساتھ تجربات کے مطابق آتے ہیں جن کے پیغامات یسوع مسیح کی تعلیمات سے بہت دور ہیں پیغامات ایسے ہوتے ہیں جیسے مومنین کو ڈرایا جارہا ہوں ہمیں چاہیے کہ یسوع مسیح کی تعلیمات کے مطابق عملی طور پر کلیسیا کو متحرک اور یکجا کریں انہوں نے مذید بتا یا کہ آج کل کی کلیسیا اعمال 2 باب 44 سے 47 آیات کے مطابق نہیں ہے اس کے مطابق ہونے کے لئے کلیسیا کو ازسرنو تبدیل ہونے کی ضرورت ہے ۔
اس کے بعد 6 گروپ بنائے گئے ان کو مقامی تھیالوجی کتاب سے سوالات دیے گئے تما م شرکاء نے ان سوالات کے جوابات باہمی مشاورت سے دیئے اور رپورٹ پیش کی۔ اس کے بعد شرکاء نے اپنے تاثرات دیئے ریورنڈ فادر طارق طالب نے اظہارِ خیال کیااورمکتبہ عناویم پاکستان کے کام کو سراہا۔

اور کہا ہم سب ایک کلیسیا ہیں۔اس کا عملی ثبوت ہم پاک قربانی کی یاد گری مناتے ہوئے دیکھتے ہیں جب ہم ایک ہی پیالہ اور ایک ہی روٹی میں سے لیتے ہیں۔ سسٹر ثمینہ جوزف نے اظہار خیال کرتے ہوئے کہا کہ میرپورخاص کی کلیسیا بہت باشعور ہے اس میں بہت گروپس ہیں جو کلیسیا کے متحرک ہونے کی نشاندہی ہے۔
ریورنڈ فادر عمانیوئیل عاصی نے اظہار خیال کرتے ہوئے مکتبہء عناویم پاکستان اور مکتبہ عناویم پاکستان ۔مقامی میرپورخاص گروپ کو مبارک باد دی خاص طور پر ماسٹر خرم شہزاد کو مبارک باد دی کہ انہوں نے کلیسیا کےموضوع پر بڑی خوبصورتی سے بات کی جس میں انہوں نے تنقیدی اور معلوماتی جا ئزہ پیش کیا انہوں نے بتایا کہ کلیسیا امید کی علامت ہے ویٹی کن مجلس دوم کی تعلیمات کے مطابق نکات ہیں جن میں پہلا نقطہ ہے تجدید دوسرا مقامیت اور تیسرا مومنین ہے مکتبہ عناویم پاکستان تیسرے نقطے پر کام کرتا ہے مومنین کی تربیت کرتا ہے شریک کرتا ہے اوران کو قیادت کے لئے تیار کرتا ہے اور چوتھا نقطہ اجتماعیت ہے اس ساری باتوں کا نچوڑ یہ ہے
پر لوگوں کی تربیت کی جاتی ہے۔ Grass root level
پروگرام کے اختتام پر مسز الیشبع جاوید نے میرپورخاص گروپ کو مبارک باد دی اور ان کی کاوشوں کو سہرایا اور بتایا کہ اس وقت میرپورخاص گروپ مکتبہ عناویم پاکستان کے تمام گروپس میں سب سے نمایاں اور ایکٹو گروپ ہےگروپ کے ٹیم ورک ، متحدہ اور باقاعدگی پر زور دیا۔ نہوں نے اظہارِتشکر پیش کیا۔
گروپ کے3ممبران اور 3شرکاء کی سالگرہ کا کیک کاٹا گیا ۔ٹیچرز ڈے کی مناسبت سے فادر عمانیوئیل عاصی کے ساتھ مل کر پروگرام میں شریک ٹیچرز نے کیک کاٹا۔ پروگرام کے آخر میں فادر جوزے ہاریوولہ نے آخری دعا کی اور سب کو برکت دی۔

Samson

Read Previous

کرائسٹ دی کنگ سیمنری، کراچی میں ایک روزہ سیمینار کا انعقاد

Read Next

بشپ بینی ٹریوس کیلئے سیکرڈ پالیم کی برکت کی پاک ماس

Leave a Reply

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے